عنوان: اعتکاف کی جگہ کو گھیرنا(105037-No)

سوال: مفتی صاحب! مسجد میں اعتکاف کے لئے اعتکاف کی جگہ کو کسی کپڑے یا چادر وغیرہ سے گھیر لینا کیسا ہے؟

جواب: اعتکاف کی جگہ کو کپڑے وغیرہ سے گھیر لینا مسنون ہے، نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم کے اعتکاف کی جگہ کو کپڑے یا کھجور کے پتوں سے گھیرا گیا تھا، اور چٹائی کا دروازہ بنا دیا گیا تھا۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

کما فی الحدیث النبوی:

حدثنا أبو النعمان حدثنا حماد بن زيد حدثنا يحيى عن عمرة عن عائشة رضي الله عنها قالت كان النبي صلى الله عليه وسلم يعتكف في العشر الأواخر من رمضان فكنت أضرب له خباء فيصلي الصبح ثم يدخله فاستأذنت حفصة عائشة أن تضرب خباء فأذنت لها فضربت خباء فلما رأته زينب ابنة جحش ضربت خباء آخر فلما أصبح النبي صلى الله عليه وسلم رأى الأخبية فقال ما هذا فأخبر فقال النبي صلى الله عليه وسلم ألبر ترون بهن فترك الاعتكاف ذلك الشهر ثم اعتكف عشرا من شوال۔

(صحیح البخاری، 272/1، ط: قدیمی)

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص، کراچی
Print Full Screen Views: 308
aetikaaf ki jaga ko ghairna

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Aitikaf

Copyright © AlIkhalsonline 2021. All right reserved.

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com