عنوان: کیا داماد کا سوتیلی ساس سے پردہ ہے؟(5369-No)

سوال: مفتی صاحب ! زید کی دو بیویاں ہیں، تمام بچے پہلی بیوی سے ہیں اور دوسری بیوی سے کوئی اولاد نہیں ہے۔
زید کو اپنی بیٹی کا نکاح کرنا ہے، کیا زید کا داماد زید کی دوسری بیوی کے لئے محرم ہوگا یا اسے اس کے ساتھ حجاب کرنا پڑے گا؟

جواب: واضح رہے کہ داماد کا سوتیلی ساس( بیوی کی سوتیلی ماں) سے شرعا پردہ ہوگا، کیونکہ بیوی کی سوتیلی ماں محرم نہیں ہے، اور بیوی کے انتقال کے بعد بیوی کی سوتیلی ماں سے اس کا نکاح بھی ہوسکتا ہے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

الھندیة: (القسم الرابع، المحرمات بالجمع، 277/1)
وکذا یجوز بین امرأۃ وبنت زوجہا فإن المرأۃ لو فرضت ذکرا حلت لہ تلک البنت بخلاف العکس ۔

مجمع الأنھر: (کتاب النکاح، باب المحرمات، 480/1)
بخلاف الجمع بین امرأۃ وبنت زوجہا فإنہ یجوز لأنہ لو فرضت المرأۃ ذکراً جاز لہ أن یتزوج بنت الزوج لأنہا بنت رجل أجنبی ۔

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص،کراچی

Print Full Screen Views: 2905 Oct 07, 2020
kia damad ka soteeli saas say parda hota hai?, Is the son-in-law veiled from the step-mother-in-law?

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Nikah

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © Al-Ikhalsonline 2024.