عنوان: منگنی کی تقریب میں شرکت کرنے کا شرعی حکم(5432-No)

سوال: مفتی صاحب ! اگر منگنی کے پروگرام میں کوئی خلافِ شرع کام نہ ہوں، تو اس پروگرام میں شرکت کر سکتے ہیں؟

جواب: ایسی تقریب جس میں خلاف شرع امور نہ ہوں، جیسے : موسیقی، بے پردگی وغیرہ، اس میں شرکت کرنا جائز ہے، بلکہ صلہ رحمی کی نیت سے جانے میں ثواب بھی ہے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

سنن الترمذی: (رقم الحدیث: 1908، ط: شرکة مکتبة)
عن عبد الله بن عمرو، عن النبي صلى الله عليه وسلم قال: ليس الواصل بالمكافئ، ولكن الواصل الذي إذا انقطعت رحمه وصلها. هذا حديث حسن صحيح۔

الھندیة: (کتاب الکراھیة، 343/5، ط: رشیدیة)
من دعی الی ولیمۃ فوجد ثمہ لعبا اوغناءً فلابأس ان یقعد ویاکل فان قدر علی المنع یمنعہم، وان لم یقدر یصبر ،وہذا اذالم یکن مقتدیً بہ، امااذاکان ولم یقدر علی منعہم فانہ یخرج ولایقعد ولوکان ذٰلک علی المائدۃ لاینبغی ان یقعدوان لم یکن مقتدی بہ وہذا کلہ بعد الحضور۔ واما اذاعلم قبل الحضور فلایحضر؛ لانہ لایلزمہ حق الدعوۃ، بخلاف ما اذا ھجم علیہ؛ لانہ قد لزمہ، کذا فی السراج الوہاج.

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص،کراچی

Print Full Screen Views: 787 Oct 14, 2020
Mnagni ki taqreeb me / mein shirkat karne / karney ka shari tareeqa, Shariah ruling to attend the engagement ceremony

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Nikah

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © Al-Ikhalsonline 2024.