عنوان: جس لڑکی کے ساتھ بوس و کنار کیا، اس کی بہن سے شادی کرنا۔ (6868-No)

سوال: میرا سوال یہ ہے کہ کوئی لڑکا کسی لڑکی سے شہوت کے ساتھ بوس وکنار کرے، لیکن زنا نہ کرے، کیا وہ لڑکا اس لڑکی کی چھوٹی بہن کے ساتھ نکاح کر سکتا ہے؟

جواب: صورت مسئولہ میں اگر کوئی دوسرا سبب حرمت نہ ہو تو صرف شہوت کے ساتھ بوس و کنار کرنے سے اس لڑکی کی بہن حرام نہیں ہوگی۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

رد المحتار: (فصل فی المحرمات، ط: سعید)
وفي الخلاصة : وطی أخت امرأته ، لا تحرم عليه امرأته ، در مختار - ووجهه أنه اعتبار لماء الزاني ، قال في البحر : لو وطی أخت امرأته بشبهة ، تحرم امرأته ما لم تنقض عدة ذات الشبهۃ

و فیه ایضا: (32/3، ط: سعید)
قَوْلُهُ: "وَحَرُمَ أَيْضًا بِالصِّهْرِيَّةِ أَصْلُ مَزْنِيَّتِهِ" قَالَ فِي الْبَحْرِ: أَرَادَ بِحُرْمَةِ الْمُصَاهَرَةِ الْحُرُمَاتِ الْأَرْبَعَ حُرْمَةَ الْمَرْأَةِ عَلَى أُصُولِ الزَّانِي وَفُرُوعِهِ نَسَبًا وَرَضَاعًا وَحُرْمَةَ أُصُولِهَا وَفُرُوعِهَا عَلَى الزَّانِي نَسَبًا وَرَضَاعًا، كَمَا فِي الْوَطْءِ الْحَلَالِ، وَيَحِلُّ لِأُصُولِ الزَّانِي وَفُرُوعِهِ أُصُولُ الْمُزَنِيّ بِهَا وَفُرُوعُهَا۔

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص،کراچی

Print Full Screen Views: 670 Feb 22, 2021
jis larki kay sath bous so kinar kia uski behen say shadi karna, Marrying the sister of the girl he kissed.

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Nikah

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © Al-Ikhalsonline 2024.