عنوان: کیا اعتکاف میں بیٹھا ہوا شخص سگریٹ پینے کے لئے مسجد سے باہر جاسکتا ہے؟(106979-No)

سوال: اگر کوئی شخص اعتکاف میں بیٹھا ہوا ہو اور وہ سگریٹ پینے کے لئے مسجد سے باہر جانا چاہے، تو کیا وہ سگریٹ پینے کے لئے مسجد سے باہر جاسکتا ہے؟

جواب: واضح رہے کہ بلا عذرِ طبعی و شرعی مسجد سے باہر نکلنے سے اعتکاف ٹوٹ جاتا ہے اور سگریٹ پینا عذرِ طبعی و شرعی میں داخل نہیں ہے، لہذا اگر کوئی شخص سگریٹ پینے کے لئے مسجد سے باہر چلا جائے، تو اس کا اعتکاف ٹوٹ جائے گا، البتہ اگر قضائے حاجت کے لئے بیت الخلاء آنے اور جانے کے دوران وہ سگریٹ پی لے، تو اس کا اعتکاف نہیں ٹوٹے گا۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

کما فی الھندیۃ:

(وأما مفسداته) فمنها الخروج من المسجد فلا يخرج المعتكف من معتكفه ليلا ونهارا إلا بعذر، وإن خرج من غير عذر ساعة فسد اعتكافه في قول أبي حنيفة - رحمه الله تعالى - كذا في المحيط. سواء كان الخروج عامدا أو ناسيا هكذا في فتاوى قاضي خان۔۔۔۔(ومن الأعذار الخروج للغائط والبول، وأداء الجمعة)۔۔الخ

(ج: 1، ص: 212، ط: دار الفکر)

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص، کراچی
Print Views: 409
kia aetikaaf mai betha hua shakhs cigratte pinay kay liye masjid say bahar ja sakta hai?

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Aitikaf

Copyright © AlIkhalsonline 2021. All right reserved.

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com