عنوان: صبح کے وقت پڑھی جانے والی دعا(107107-No)

سوال: مفتی صاحب ! صبح کے وقت پڑھی جانے والی دعا بتادیں۔

جواب: صبح کے وقت پڑھی جانے والی دعا

اَللّٰهُمَّ مَا حَلَفْتُ مِنْ حَلِفٍ أَوْ قُلْتُ مِنْ قَوْلٍ أَوْ نَذَرْتُ مِنْ نَذْرٍ، فَمَشِيئَتُكَ، بَيْنَ يَدَيْ ذَلِكَ كُلِّهِ: مَا شِئْتَ كَانَ وَمَا لَمْ تَشَأْ لَمْ يَكُنْ، اَللّٰهُمَّ اغْفِرْ لِي وَتَجَاوَزْ لِي عَنْهُ، اَللّٰهُمَّ فَمَنْ صَلَّيْتَ عَلَيْهِ فَعَلَيْهِ صَلَاتِي، وَمَنْ لَعَنْتَ فَعَلَيْهِ لَعْنَتِي۔

ترجمہ: اے اللہ ! میں نے جو قسم کھائی یا کوئی بات کہی یا کوئی نذر مانی، پس تیری مشیت ان سب کے آگے ہے، تو جو چاہے ہوتا ہے، اور جو نہ چاہے نہیں ہوتا۔

اے اللہ ! مجھے بخش دے اور میرے لیے اس سے درگذر فرما، اے اللہ ! جس پر تیری رحمت ہو، پس اسے میری دعا بھی شاملِ حال رہے، اور جس پر تو لعنت فرمائے، اس پر میری طرف سے بھی لعنت ہو۔

(سنن لابي داود، بَابُ مَا يَقُولُ إِذَا أَصْبَحَ، رقم الحديث: 5087)

فضیلت: حدیث شریف میں آتا ہے کہ جو شخص صبح کے وقت اس دعا کو پڑھے گا، تو وہ اس دن کے (فتنوں) سے محفوظ و مستثنٰی رہے گا۔

دلائل:

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔


کذا فی السنن لابی داؤد:

حَدَّثَنَا ابْنُ مُعَاذٍ، حَدَّثَنَا أَبِي، حَدَّثَنَا الْمَسْعُودِيُّ، حَدَّثَنَا الْقَاسِمُ، قَالَ: كَانَ أَبُو ذَرٍّ يَقُولُ: مَنْ قَالَ حِينَ يُصْبِحُ: " اللَّهُمَّ مَا حَلَفْتُ مِنْ حَلِفٍ أَوْ قُلْتُ مِنْ قَوْلٍ أَوْ نَذَرْتُ مِنْ نَذْرٍ، فَمَشِيئَتُكَ، بَيْنَ يَدَيْ ذَلِكَ كُلِّهِ: مَا شِئْتَ كَانَ وَمَا لَمْ تَشَأْ لَمْ يَكُنْ، اللَّهُمَّ اغْفِرْ لِي وَتَجَاوَزْ لِي عَنْهُ، اللَّهُمَّ فَمَنْ صَلَّيْتَ عَلَيْهِ فَعَلَيْهِ صَلَاتِي، وَمَنْ لَعَنْتَ فَعَلَيْهِ لَعْنَتِي، كَانَ فِي اسْتِثْنَاءٍ يَوْمَهُ ذَلِكَ، أَوْ قَالَ: ذَلِكَ الْيَوْمَ "

(سنن لابي داود، بَابُ مَا يَقُولُ إِذَا أَصْبَحَ، رقم الحديث: 5087، دار ابن حزم)

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص، کراچی

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص، کراچی
Print Full Screen Views: 419
subah kay waqt parhi janay wali dua

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Azkaar & Supplications

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © Al-Ikhalsonline 2022.