عنوان: حرام آمدنی والے ساتھ قربانی کے جانور میں شرکت(107207-No)

سوال: مفتی صاحب ! والد صاحب نے سودی سرٹیفیکٹ لیے ہوئے ہیں، اور ان کی گورنمنٹ ملازمت تھی، جس کی پینشن بھی آتی ہے، ان کی پینشن حلال ہے، کیا ان کے ساتھ اجتماعی قربانی میں شریک ہو سکتا ہوں؟

جواب: اگر والد صاحب کی آمدنی صرف حرام ہو یا غالب آمدنی حرام ہو، تو والد صاحب کے ساتھ حصہ ملانے سے قربانی درست نہیں ہوگی، البتہ اگر وہ کسی سے حلال رقم ادھار لیکر قربانی میں حصہ ڈال لیں، تو ان کے ساتھ قربانی میں شریک ہونا جائز ہے۔


۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

کذا فی الشامیۃ:

وإن کان شریک الستۃ نصرانیا أو مریدا اللحم لم یجز عن واحد منہم لأن الإراقۃ لا تتجزأ۔

(شامی، 326/6 ط: سعید)

کذا فی الھندیۃ:


أکل الربوا وکاسب الحرام أہدی إلیہ أو أضافہ وغالب مالہ حرام لایقبل ولا یأکل ما لم یخبرہ أن ذٰلک المال أصلہ حلال ورثہ أو استقرضہ۔

(الفتاویٰ الہندیۃ 343/5 کتاب الکراھیۃ)


واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص، کراچی
Print Views: 41

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Zakat-o-Sadqat

Copyright © AlIkhalsonline 2021. All right reserved.

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com