عنوان: روزے کی حالت میں بیوی کے ساتھ بوس وکنار کی شرعی حیثیت(7270-No)

سوال: مفتی صاحب! کیا روزے کی حالت میں بیوی کے ساتھ بوس وکنار کی شریعت میں اجازت ہے؟ رہنمائی فرمائیں۔

جواب: اگر روزے کی حالت میں بیوی کا بوسہ لینے سے انزال کا خوف نہ ہو، یا نفس کے بے اختیار ہوکر جماع کرنے کا خطرہ نہ ہو، تو اس صورت میں بیوی کا بوسہ لینا بلا کراہت جائز ہے، لیکن اگر بوسہ لینے میں انزال کا خوف ہو یا جماع کا اندیشہ ہو، تو ایسی صورت میں روزے کی حالت میں بیوی کا بوسہ لینا، مکروہ ہوگا۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

الفتاوی الھندیۃ: (200/1، ط: دار الفکر)
ولا بأس بالقبلة إذا أمن على نفسه من الجماع والإنزال ويكره إن لم يأمن والمس في جميع ذلك كالقبلة كذا في التبيين.
وأما القبلة الفاحشة، وهي أن يمص شفتيها فتكره على الإطلاق۔

و فیھا ایضا: (204/1، ط: دار الفکر)
وإذا قبل امرأته، وأنزل فسد صومه من غير كفارة كذا في المحيط.

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص،کراچی

Print Full Screen Views: 1778 Apr 13, 2021
rozay ki halat mai biwi kay sath boos so kinar ki shar'ee hasiat, Shariah Status of Kissing Wife While Fasting

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Sawm (Fasting)

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © Al-Ikhalsonline 2024.