عنوان: روزے کی حالت میں ڈکار لینے کی وجہ سے اگر کھانا حلق میں آجائے، تو اس کھانے کو نگلنے سے روزہ ٹوٹنے کا حکم (7308-No)

سوال: مفتی صاحب! روزہ کی حالت میں سوتے ہوئے پیٹ سے نکل کر کچھ منہ میں آکر واپس پیٹھ میں چلا جائے، تو کیا اس سے روزہ پر اثر پڑے گا؟

جواب: واضح رہے کہ اگر ڈکار سے کھانا وغیرہ حلق تک آیا، اور غیر ارادی طور پر خود بخود اندر چلا گیا، تو روزہ فاسد نہیں ہوگا، البتہ اگر کھانا منہ تک آگیا، اور پھر اسے اپنے قصد و ارادے سے نگل لیا، تو روزہ فاسد ہوجائے گا، اور اس روزے کی قضا لازم ہوگی۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

الدر المختار مع رد المحتار: (بَابُ مَا يُفْسِدُ الصَّوْمَ وَ مَا لَا يُفْسِدُهُ الْفَسَادُ، 424/2، ط: سعید)
"وَإِنْ ذَرَعَهُ الْقَيْءُ وَخَرَجَ) وَلَمْ يَعُدْ (لَايُفْطِرُ مُطْلَقًا) مَلَأَ أَوْ لَا (فَإِنْ عَادَ) بِلَا صُنْعِهِ (وَ) لَوْ (هُوَ مِلْءُ الْفَمِ مَعَ تَذَكُّرِهِ لِلصَّوْمِ لَايَفْسُدُ) خِلَافًا لِلثَّانِي".
(قَوْلُهُ: لَايُفْسِدُ) أَيْ عِنْدَ مُحَمَّدٍ، وَهُوَ الصَّحِيحُ؛ لِعَدَمِ وُجُودِ الصُّنْعِ؛ وَلِعَدَمِ وُجُودِ صُورَةِ الْفِطْرِ، وَهُوَ الِابْتِلَاعُ وَكَذَا مَعْنَاهُ؛ لِأَنَّهُ لَايَتَغَذَّى بِهِ بَلْ النَّفْسُ تَعَافُهُ، بَحْرٌ".

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص،کراچی

Print Full Screen Views: 2970 Apr 20, 2021
rozay ki halat mai dakaar lene ki waja say agar khana halaq mai aajaye to us khanay ko nilgalnay say roza tootnay ka hukum, If food enters the throat due to belching while fasting, then the ruling / order to break the fast in case of swallowing the food.

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Sawm (Fasting)

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © Al-Ikhalsonline 2024.