عنوان: کیا قادیانی لڑکی سے اسلام لانے کے بعد نکاح کرنا جائز ہے؟(7594-No)

سوال: ایک لڑکی ہے، جو پہلے قادیانی تھی اور اب اسلام لے آئی ہے، میں اس سے نکاح کرنا چاہتا ہوں، کیا میں اس سے نکاح کرسکتا ہوں؟

جواب: صورتِ مسئولہ میں اگر مذکورہ لڑکی واقعتاََ قادیانیت سے توبہ تائب ہو کر مکمل طور پر اسلام لے آئی ہے، تو آپ کے لئے اس سے نکاح کرنا جائز ہے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

الفتاوی الھندیۃ: (281/1، ط: دار الفکر)
لا يجوز نكاح المجوسيات ولا الوثنيات ۔۔۔ ويدخل في عبدة الأوثان عبدة الشمس والنجوم والصور التي استحسنوها والمعطلة والزنادقة والباطنية والإباحية وكل مذهب يكفر به معتقده كذا في فتح القدير۔

فتاوی اللجنۃ الدائمۃ: (311/18)
لایجوز ان یتزوج شاب مسلم فتاۃ تدین بالدیانۃ القادیانیۃ لکونھا کافرۃ۔

و فیھا أیضاً: (311/18)
لا یصح للمسلم ان یتزوج المشرکۃ من غیر الیھود والنصاری ۔۔۔ واذا تابت من شرکھا واسلمت جاز لہ ان یتزوجھا۔

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص،کراچی

Print Full Screen Views: 787 May 22, 2021
kia qadyani larki say islam lanay kay baad nikkah karna jaiz hai?, Is it permissible to marry a Qadiani girl after converting to Islam?

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Nikah

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © Al-Ikhalsonline 2024.