عنوان: احتلام ہوجانے کی صورت میں غسل کرنے کے بعد دوبارہ وہی کپڑے پہننا(107624-No)

سوال: جن کپڑوں میں احتلام ہوا ہے، کیا غسل کرنے کے بعد کیا وہی کپڑے دوبارہ پہن سکتے ہیں جس میں احتلام ہوا تھا؟

جواب: صورت مسئولہ میں کپڑے کے جس حصہ پر منی لگی ہو، اس حصہ کو تین مرتبہ اچھی طرح دھو کر ہر مرتبہ اس طرح نچوڑ لیں کہ پانی کے قطرے ٹپکنا بند ہوجائے، تو وہ کپڑا پاک ہوجائے گا، اور اگر بہتا ہوا پانی ہو، تو اس پانی میں اتنی دیر کپڑا دھوئیں کہ کپڑا پاک ہوجانے کا اطمینان ہو جائے، نیز غسلِ جنابت کے بعد اسی کپڑے کو دوبارہ پہن بھی سکتے ہیں، اور ایسے کپڑے میں نماز پڑھنا بھی جائز ہے۔

البتہ اگر کپڑے پر لگی ہوئی منی کو دھوئے بغیر دوبارہ وہی کپڑے پہن لیے، اور اس کی تری جسم یا کپڑے پر لگ گئی، تو وہ جگہ ناپاک ہوجائے گی، نماز سے پہلے کپڑے اور جسم کے اس حصے کو پاک کرنا ضروری ہوگا۔

دلائل:

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔


وکذا فی الشامیۃ:

حاصلہ کما فی البدائع ان المتنجس اما ان لا یتشرب فیہ اجزاء النجاسۃ اصلا… او یتشرب فیہ قلیلا… او یتشرب کثیرا ففی الاول طہارتہ بزوال عین النجاسۃ المرئیۃ او بالعدد علی ما مرو فی الثانی کذالک… واما فی الثالث، فان کان مما یمکن عصرہ کالثیاب فطہارتہ بالغسل والعصر الی زوال المرئیۃ وفی غیرھا بتثلیثھا وان کان ممالا ینعصر کالحصیر المتخذ من البردی ونحوہ ان علم أنہ لم یتشرب فیہ بل اصاب ظاھرہ یطھر بازالۃ العین او بالغسل ثلاثا بلا عصروان علم تشربہ… فعند محمد لا یطھر ابدا وعند ابی یوسف ینقع فی الماء ثلاثا ویجفف کل مرۃ والاول اقیس والثانی اوسع اھ وبہ یفتی درر۔

(ج:1، ص:322)

لمافی البحر الرائق:

قولہ (وبتثلیث الجفاف فیما لا ینعصر) ای مالا ینعصر فطھارتہ غسلہ ثلاثا وتجفیفہ فی کل مرۃ لان للتجفیف اثرا فی استخراج النجاسۃ وھو ان یترکہ حتی ینقطع التقاطر ولا یشترط فیہ الیبس۔

(ج:1، ص:413)

وکذا فی الھندیۃ:

ان غسل ثلاثا فعصر فی کل مرۃ ثم تقاطرت منہ قطرۃ فأصابت شیأ ان عصرہ فی المرۃ الثالثۃ وبالغ فیہ بحیث لوعصرہ لایسیل منہ الماء فالثوب والید وما تقاطر طاھر والا فالکل نجس۔

(ج:1، ص:42)

وکذا فی الفقہ الاسلامی وادلتہ:

واما ان کان مما لایعصر کالحصیر والسجاد والخشب: فینقع فی الماء ثلاث مرات ویجفف فی کل مرۃ وھو قول ابی یوسف وھو الرأی الراجح وقال محمد لا یطھر ابداً۔

(ج1، ص:335)

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص، کراچی

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص، کراچی
Print Full Screen Views: 291
ihtilaam hojnay ki soorat mai ghusal karne kay bad dobara wohi kapra pehenna

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Purity & Impurity

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © Al-Ikhalsonline 2022.