عنوان: رمضان میں وتر کی نماز کو جماعت سے ادا کرنے کا حکم(107726-No)

سوال: رمضان میں وتر کی نماز کو جماعت سے ادا کیا جاتا ہے، اس کا کیا حکم ہے اور کیا اس کا کوئی ثبوت ہے؟

جواب: رمضان کے مہینہ میں وتر کی نماز کو جماعت سے ادا کرنا مستحب ہے اور یہ حضرت عمر رضی اللہ تعالی عنہ کے اثر سے ثابت ہے اور اسی پر امتِ مسلمہ کا اجماع ہے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

رد المحتار: (48/2، ط: دار الفکر)
أن جماعۃ الوتر تبع لجماعۃ التراویح وان کان الوتر نفسہ أصلا فی ذاتہ لان سنۃ الجماعۃ فی الوتر انما عرفت بالأثر تابعۃ للتراویح……فالوتر کالتراویح فکما أن الجماعۃ فیھا سنۃ فکذلک الوتر بحر وفی شرح المنیۃ والصحیح أن الجماعۃ فیھا أفضل الا ان سنیتھا لیست کسنیۃ جماعۃ التراویح الخ۔

البحر الرائق: (69/2)
(قولہ ویوتر بجماعۃ فی رمضان فقط) أی علی وجہ الاستحباب وعلیہ اجماع المسلمین کمافی الھدایۃ واختلفوا فی الافضل ففی الخانیۃ الصحیح ان اداء الوتر بجماعۃ فی رمضان أفضل لان عمرؓ کان یؤمھم فی الوتر الخ۔

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص،کراچی

Print Full Screen Views: 386
ramzan mai witar ki namaz ko jamat say ada karne ka hukum

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Taraweeh Prayers

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © Al-Ikhalsonline 2022.