عنوان: بغیر سیاہی کے انگلی سے میت کے چہرہ اور سینہ پر آیت یا کلمہ وغیرہ لکھنا کیسا ہے؟(107745-No)

سوال: مفتی صاحب ! اگر رشتہ دار میت کے چہرہ اور سینہ پر کوئی آیت یا کلمہ وغیرہ انگلی سے بغیر سیاہی کے لکھنا چاہیں، تو اس کا کیا حکم ہے؟

جواب: واضح رہے کہ بغیر سیاہی کے انگلی سے میت کے چہرہ اور سینہ پر آیت یا کلمہ وغیرہ لکھنا جائز ہے، بشرطیکہ یہ کام ضروری سمجھ کر نہ کیا جائے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

کما فی الشامیۃ:

تکرہ کتابۃ القرآن وأسماء اﷲ تعالیٰ علی الدراھم والمحاریب والجدوان وما یفرش، وما ذاک الا لاحترامہ وخشیۃ وطئہ ونحوہ مما فیہ اھانۃ فالمنع ھنا بالاولیٰ مالم یثبت عن المجتھد أو ینقل فیہ حدیث ثابت۔ نعم نقل بعض المحشین عن فوائد الشرجی أن مما یکتب علی جبھۃ المیت بغیر مداد با لاصبع المسبحۃ۔ بسم اﷲ الرحمٰن الرحیم۔ وعلی الصدرک لا الہ الا اﷲ محمد رسول اﷲ وذلک بعد الغسل قبل التکفین۔

(ج: 2، ص: 246، ط: دار الفکر)

کذا فی نجم الفتاوی:

(ج: 2، ص: 742)

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص، کراچی
Print Views: 139

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Funeral & Jinaza

Copyright © AlIkhalsonline 2021. All right reserved.

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com