عنوان: کیا اہلِ میت کے کھانے کا انتظام ان کے پڑوسیوں کو کرنا چاہیے؟(107759-No)

سوال: میں نے ایک دوست سے سنا ہے کہ جب کسی کے پڑوس میں کسی فرد کا انتقال ہوجائے، تو پڑوسیوں کو اہلِ میت کے لئے کھانے کا انتظام کرنا چاہیے، کیا یہ بات درست ہے؟

جواب: جی ہاں ! پڑوسیوں کا اہلِ میت کے لئے کھانے کا انتظام کرنا اور خود اہلِ میت کے ساتھ بیٹھ کر انہیں کھانا کھلانا مستحب اور باعثِ ثواب ہے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

کما فی فتح القدیر:

ویستحب لجیران اھل المیت والاقرباء الاباعد تھیئۃ طعام لھم یشبعھم یومھم ولیلتھم لقولہ ﷺ ’’اصنعوا لاٰل جعفر طعاماً فقد جاء ھم ما یشغلھم… ولانہ بر ومعروف ویلح علیھم فی الاکل لان الحزن یمنعھم من ذلک فیضعفون۔

(ج: 2، ص: 142)

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص، کراچی
Print Views: 77

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Funeral & Jinaza

Copyright © AlIkhalsonline 2021. All right reserved.

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com