عنوان: غسل کے دوران میت کے ناک، کان اور منہ میں روئی رکھنا(7833-No)

سوال:
مفتی صاحب ! میت کو غسل دیتے وقت اس کے ناک، کان اور منہ میں روئی رکھی جاتی ہے، یہ روئی رکھنا کیسا ہے؟




جواب: میت کو غسل دیتے وقت ناک، کان اور منہ میں روئی رکھ سکتے ہیں، تاکہ وضو اور غسل کراتے ہوئے پانی اندر نہ چلا جائے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

الدر المختار مع رد المحتار: (198/2، ط: دار الفکر)
ولابأس بجعل القطن علی وجھہ وفی مخارقہ کدبر وقبل واذن وفم۔
(قولہ ولا باس الخ) کذا فی الزیلعی واشار الی ان ترکہ اولیٰ قال فی الفتح ولیس فی الغسل استعمال القطن فی روایات الظاھرۃ وعن ابی حنیفۃ انہ یجعل فی منخریہ وفمہ

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص،کراچی

Print Full Screen Views: 389
ghusal kay doran mayyat kay naak kaan or moo mai rooi rakhna

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Funeral & Jinaza

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © Al-Ikhalsonline 2022.