عنوان: تراویح میں دوسری مرتبہ قرآن ختم کرنے کا کیا حکم ہے؟(107836-No)

سوال: میں نے ابھی مصلے پر 12 روزہ تراویح سنائی ہے اور لوگ مجھے دوبارہ 12 روزہ تراویح سنانے پر پابند کرنے کی کوشش کر رہے ہیں، سوال یہ ہے کہ میرے لئے دوسری مرتبہ تراویح میں قرآن ختم کرنے کا کیا حکم ہے؟

جواب: رمضان کے مہینہ میں تراویح کی نماز میں ایک مرتبہ قرآن ختم کرنا مسنون ہے اور ایک سے زائد مرتبہ ختم کرنا افضل ہے، لازم نہیں ہے، لہذا صورتِ مسئولہ میں اگر وقت ہو اور آپ اپنی خوشی سے تراویح میں دوسری مرتبہ قرآن سنائیں، تو یہ آپ کے لئے بڑی افضلیت اور سعادت کی بات ہوگی، لیکن اگر آپ اس پر راضی نہ ہوں، تو مذکورہ لوگوں کا آپ کو دوسری مرتبہ تراویح میں قرآن سنانے پر پابند کرنا درست نہیں ہے۔

دلائل:

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔


کما فی الشامیۃ:

(والختم) مرّۃ سنۃ ومرتین فضیلۃ وثلاثا افضل (ولا یترک) الختم (لکسل القوم)۔

(ج: 2، ص: 46، ط: دار الفکر)

وفی الھندیۃ:

السنۃ فی التراویح انما ھو الختم مرّۃ فلا یترک لکسل القوم… والختم مرتین فضیلۃ والختم ثلاث مرات افضل کذا فی السراج الوھاج۔

(ج: 1، ص: 117، ط: دار الفکر)

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص، کراچی

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص، کراچی
Print Full Screen Views: 109
taraweeh mai doosri martaba quran khatam karne ka kia hukum hai?

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Taraweeh Prayers

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © Al-Ikhalsonline 2022.