عنوان: جوتے یا چپل پہن کر یا انہیں اتارنے کے بعد ان پر کھڑے ہوکر نماز جنازہ پڑھنا کیسا ہے؟(107855-No)

سوال: مفتی صاحب ! جوتے یا چپل پہن کر یا انہیں اتارنے کے بعد ان پر کھڑے ہوکر نماز جنازہ پڑھنا کیسا ہے؟

جواب: جوتے اور چپل اتارنے کے بعد ان پر کھڑے ہوکر نمازِ جنازہ پڑھنا درست ہے، اور اس صورت میں جوتوں اور چپلوں کا اوپری حصہ (جہاں پیر رکھا ہوا ہو) کا پاک ہونا ضروری ہے، جگہ کا پاک ہونا اور جوتوں، چپلوں کے اطراف اور ان کے تلے کا پاک ہونا ضروری نہیں ہے۔
اور اگر جوتے اور چپل پہن کر نماز پڑھی جائے، تو اس صورت میں پورے جوتے یا پوری چپل اور جگہ دونوں کا پاک ہونا ضروری ہے، لہذا اگر جوتے یا چپل کا کوئی بھی حصہ یا ان کی جگہ بقدر مانع ناپاک ہو، تو نماز نہ ہوگی۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

کما فی البحر الرائق:

لو قام على النجاسة، وفي رجليه نعلان لم يجز، ولو افترش نعليه وقام عليهما جازت، وبهذا يعلم ما يفعل في زماننا من القيام على النعلين في صلاة الجنازة لكن لا بد من طهارة النعلين كما لا يخفى۔۔الخ

(ج: 2، ص: 193، ط: دار الكتاب الإسلامي)

کذا فی فتاویٰ دار العلوم دیوبند:

(رقم الفتوی: 605-514/N=6/1439)

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص، کراچی
Print Views: 168

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Funeral & Jinaza

Copyright © AlIkhalsonline 2021. All right reserved.

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com