عنوان: بیوی کو اپنا عضو تناسل پکڑوانا اور بیوی کی شرمگاہ چھونا اور مسلنا(107937-No)

سوال: مفتی صاحب ! شوہر کا اپنا عضو تناسل بیوی کے ہاتھ میں پکڑواکر مسلوانا یا شوہر کا بیوی کی شرمگاہ کو مسلنا جائز ہے یا نہیں؟

جواب: شوہر کا اپنا عضو تناسل بیوی کو پکڑوانا یا بیوی کے ہاتھ سے اپنا عضو تناسل مسلوانا، اسی طرح بیوی کی شرمگاہ کو چھونا یا مسلنا بلا کراہت جائز ہے۔

دلائل:

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔


کذا فی الھندیۃ:

ﻗﺎﻝ ﺃﺑﻮ ﻳﻮﺳﻒ ﺭﺣﻤﻪ اﻟﻠﻪ ﺗﻌﺎﻟﻰ: ﺳﺄﻟﺖ ﺃﺑﺎ ﺣﻨﻴﻔﺔ ﺭﺣﻤﻪ اﻟﻠﻪ ﺗﻌﺎﻟﻰ ﻋﻦ ﺭﺟﻞ ﻳﻤﺲ ﻓﺮﺝ اﻣﺮﺃﺗﻪ ﻭﻫﻲ ﺗﻤﺲ ﻓﺮﺝﻫ ﻟﺘﺤﺮﻙ ﺁﻟﺘﻪ ﻫﻞ ﺗﺮﻯ ﺑﺬﻟﻚ ﺑﺄﺳﺎ؟ ﻗﺎﻝ: ﻻ ﻭﺃﺭﺟﻮ ﺃﻥ ﻳﻌﻄﻰ اﻷﺟﺮ، ﻛﺬا ﻓﻲ اﻟﺨﻼﺻﺔ.

(ج5، ص328، کتاب الکراہیۃ، ط: دارالفکر بیروت)

کذا فی فتاویٰ عثمانی:

(ج4، ص405، مکتبہ معارف القرآن)

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص، کراچی

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص، کراچی
Print Full Screen Views: 591
biwi ko apna uzwe tanasul pakarwana or biwi ki sharam gaah choona or masalana

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Nikah

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © Al-Ikhalsonline 2022.