عنوان: ناپاکی کی حالت میں قرآن مجید کی تلاوت کرنا یا دعا کی غرض سے پڑھنا(108268-No)

سوال: حضرت ! ناپاکی کی حالت میں قرآن پڑھنا یا دعا کی غرض سے آیت پڑھنا کیسا ہے؟

جواب: ناپاکی (جنابت یا حیض و نفاس) کی حالت میں قرآن مجید کی تلاوت کرنا جائز نہیں ہے، البتہ وہ آیات جو دعا پر مشتمل ہیں، (مثلاً: سورۃ الفاتحہ، آیۃ الکرسی، ودیگر قرآنی دعائیں) انہیں بطورِ دعا پڑھ سکتے ہیں۔

دلائل:

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔


الدرمع الرد:(172/1،ط:دارالفکر)
و یحرم بہ (تلاوةالقرآن) ولو دون آیة علی المختار(بقصدہ) فلو قصد الدعاء او الثناء او افتتاح امر او التعلیم ولقن کلمة کلمة حل فی الاصح۔(قولہ کلمة کلمة) ھو المراد بقول المنیہ حرفا حرفا کما فسرہ بہ شرحھا، والمراد مع القطع بین کل کلمتین، وھذا علی قول الکرخی، وعلی قول الطحاوی تعلم نصف آیة، نھایہ وغیرھا۔ ونظر فی البحر بان الکرخی قائل باستواء الآیة وما دونھا فی المنع، واجاب فی النھر بان مرادہ بما دونھا ما بہ یسمی قارئا وبالتعلیم کلمة کلمة لا یعد قارئا۔

کذا فی فتاویٰ دارالعلوم دیوبند:جواب نمبر:14607

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص،کراچی

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص، کراچی
Print Full Screen Views: 183
napaki ki halat mai quran majeed ki tilawat karna ya dua ki gharz say parhna

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Purity & Impurity

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © Al-Ikhalsonline 2022.