عنوان: اپنے نواسے یا نواسی کا عقیقہ کرنا(108552-No)

سوال: السلام علیکم، حضرت ! کیا میں اپنے نواسے یا نواسی کا عقیقہ اپنے پیسوں سے کر سکتا ہوں؟ برائے مہربانی رہنمائی فرمائیں اور دعا کی درخواست بھی ہے، اللہ تعالیٰ آپ حضرات کو جزائے خیر عطا فرمائے، آمین

جواب: اگر آپ اپنے نواسے یا نواسی کا عقیقہ بچہ کے والدین کی اجازت سے اپنے مال سے کرنا چاہیں، تو کرسکتے ہیں، عقیقہ ہوجائے گا، البتہ اگر والدین صاحبِ استطاعت ہوں، تو ان کو اپنے بچے کا عقیقہ خود کرنا چاہیے۔

دلائل:

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔


سنن ابوداؤد:(رقم الحدیث:2842،ط:دارالفکر)
من ولد له ولد فاحب ان ينسک عنه فلينسک عن الغلام شاتين و عن الجاريه شاه۔

فتاویٰ رحیمیہ:(62/10،ط:دارالاشاعت،کراچی)

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص،کراچی

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص، کراچی
Print Full Screen Views: 129
apne / apney nawase ya nawasi ka aqiqa karna

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Qurbani & Aqeeqa

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © Al-Ikhalsonline 2022.