عنوان: التحیات یاد نہ ہو تو نماز کیسے ادا کرے؟(108753-No)

سوال: مفتی صاحب ! نماز میں التحیات (تشہد) پڑھنا واجب ہے، جس کو التحیات (تشہد) پڑھنا ہی نہیں آتی، تو وہ کیا کرے ؟ اصلاح فرمائیں۔

جواب: واضح رہے کہ قعدہ اولیٰ اور قعدہ اخیرہ میں تشہد پڑھنا واجب ہے، اگر مکمل یا تشہد کا بعض حصہ نہیں پڑھا، تو واجب کے چھوٹ جانے کی وجہ سے سجدہ سہو کرنا واجب ہوگا، اگر کسی کو التحیات یاد نہ ہو، تو اسے چاہیے کہ وہ جلد از جلد التحیات یاد کر لے، اگر یاد کرنے میں کوتاہی کرے گا، تو گناہ گار ہوگا۔

ذکر کردہ صورت میں آپ کو جتنی التحیات یاد ہے اسے پڑھ لیں، اور پھر قعدہ اخیرہ میں تشہد کی مقدار بیٹھنے کے بعد سجدہ سہو کر کے نماز پوری کر لے۔

دلائل:




الدرالمختاروحاشيةابن عابدين:(466/1)
"(والتشهدان) ويسجد للسهو بترك بعضه ككله، وكذا في كل قعدة في الأصح؛ إذ قد يتكرر عشراً.
(قوله: والتشهدان) أي تشهد القعدة الأولى وتشهد الأخيرة".

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص،کراچی

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص، کراچی
Print Full Screen Views: 194

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Salath (Prayer)

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © Al-Ikhalsonline 2022.