عنوان: مشعل اور منال نام ركھنے كاحكم(109064-No)

سوال: مشعل اور منال نام اسلامی لحاظ سے رکھنا کیسا ہے؟

جواب: یہ دنوں نام رکھنا درست ہے، "مشعَل" میم کے زبر کے ساتھ ہو، تو اس کا معنیٰ ہے، قندیل، لالٹین، لیمپ، اور میم کے زیر کے ساتھ ہو، تو اس کا معنیٰ ہے، وہ چیز جس سے آگ جلائی جائے، یا کچھ روشن کیا جائے۔


اور "مَنَال" کا معنیٰ ہے، کسی چیز کو پانا، حاصل کرنا، اسی طرح "منال" ہدیہ اور تحفہ کو بھی کہا جاتا ہے۔

دلائل:




لسان العرب:(354/11،ط:دار صادر،بيروت)
الشعيلة: الفتيلة المشعلة. والمشعل: القنديل.

وفیه أيضا:(683/11)
والنال والمنالة ‌والمنال: مصدر نلت أنال. ويقال: نلت له بشيء أي جدت، وما نلته شيئا أي ما أعطيته.

القاموس الوحید:(870/1)

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص،کراچی

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص، کراچی

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Characters & Morals

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © Al-Ikhalsonline 2022.