عنوان: تین بیویوں میں سے جس بیوی سے اولاد نہ ہو، اس کا مرحوم شوہر کی میراث میں حصہ(109430-No)

سوال: السلام علیکم، مفتی صاحب! ایک آدمی کی تین بیویاں ہیں، دو سے اولاد ہے اور دونوں بیویوں کا انتقال ہوچکا ہے، تیسری بیوی سے اولاد نہیں ہے، تو اس بیوہ کا حصہ آٹھواں ہوگا یا چوتھا؟ رہنمائی فرمادیں۔

جواب: واضح رہے کہ اگر شوہر کا انتقال ہو جائے اور اس کی کسی بیوی سے اولاد نہ ہو، تو شوہر کی میراث میں سے تمام بیویاں ایک چوتھائی (1/4) حصہ میں شریک ہوتی ہیں، اور اگر شوہر کی کوئی اولاد ہو، چاہے ایک بیوی سے ہو، یا سب سے ہوں، تو ایسی صورت میں تمام بیویاں آٹھویں (1/8) حصہ میں شریک ہوتی ہیں۔

پوچھی گئی صورت میں چونکہ مرحوم شوہر کی پہلی دو بیویوں سے اولاد ہے، اگرچہ وہ بیویاں انتقال کر چکی ہیں، لہذا تیسری بیوی کو مرحوم شوہر کی میراث میں سے آٹھواں (1/8) حصہ ملے گا۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

القرآن الکریم: (النساء، الایة: 12)

ولھن الربع مما ترکتم ان لم یکن لکم ولد فان کان لکم ولد فلھن الثمن مما ترکتم.... الخ.

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص،کراچی

Print Full Screen Views: 43
teen / three bivio / wife / zojao me / may / main se / say olad na ho,us ka marhom shohar / khawand / husband ki meras / miras me / may / main hissa

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Inheritance & Will Foster

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © Al-Ikhalsonline 2022.