عنوان: سفر میں نفلی روزہ رکھنا(9461-No)

سوال: السلام علیکم، مفتی صاحب! شام پانچ بجے بس کے ذریعہ سفر پر جانا ہے، جو کہ چھ، سات گھنٹے کا سفر ہوگا، مغرب کا وقت تقریبا 7 بجے ہوگا، تو کیا سفر کی نیت ہو، تو نفلی روزہ رکھ سکتے ہیں؟ براہ مہربانی رہنمائی فرمائیں۔

جواب: اگر روزہ رکھنے کی وجہ سے سفر میں تکلیف کا اندیشہ نہ ہو، تو روزہ رکھا جاسکتا ہے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

بدائع الصنائع: (96/2، ط: دار الكتب العلمية)

ثم الصوم في السفر أفضل من الإفطار عندنا، إذا لم يجهده الصوم ولم يضعفه.

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص،کراچی

Print Full Screen Views: 1323 May 16, 2022
safar me / mein nafli roza rakhna

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Sawm (Fasting)

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © Al-Ikhalsonline 2024.