عنوان: چوتھی بیوی کی وفات کے بعد فورا شادی کرنا(9944-No)

سوال: اگر کسی شخص نے چار شادیاں کی ہوں اور اس کی ایک بیوی کا انتقال ہوجائے اب وہ مزید ایک اور شادی کرنا چاہتا ہو تو اس کے لیے کوئی سوگ وغیرہ منانا ہے یا بیوی کے انتقال کے بعد فورا نکاح کرسکتا ہے؟

جواب: واضح رہے کہ اگر کسی شخص کے نکاح میں بیک وقت چار عورتیں ہوں اور ان میں سے کسی کا انتقال ہوجائے تو وہ شخص بغیر کسی تاخیر کے چوتھی شادی کرسکتا ہے، کیونکہ شوہر کے ذمہ شرعا کسی قسم کی عدت یا سوگ منانا لازم نہیں ہے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

الدر المختار: (48/3، ط: دار الفكر)
(و) صح ( نكاح اربع من الحرائر والاماء فقط للحر) لا أكثر.

رد المحتار: (38/3، ط: دار الفکر)
ماتت امرأته له التزوج بأختها بعد يوم من موتها كما في الخلاصة عن الأصل، وكذا في المبسوط لصدر الاسلام والمحيط السرخسي والبحر والتتاخانية وغيرها من الكتب المعتمدة. وأما ما عزي إلي النتف من وجوب العدة فلا يعتمد عليه وتمامه في كتابنا تنقيح الحامدية.

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص،کراچی

Print Full Screen Views: 531 Nov 16, 2022
chothi / 4th biwi / zoja ki wafat k bad foran shadi karna

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Nikah

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © Al-Ikhalsonline 2024.