عنوان: چوتھے کلمے کو بازار جانے کی دعا کہنا(9966-No)

سوال: بازار میں چوتھا کلمہ پڑھنے کی فضیلت کچھ عرصے سے جماعتوں میں سن رہے ہیں، آج کل سننے میں آتا ہے کہ چوتھا کلمہ بازار کی دعا ہے۔ برائے مہربانی رہنمائی فرمائیے کہ چوتھےکلمے کو بازار کی دعا کہنا کیسا ہے؟ جزاک اللہ خیرا

جواب: حدیث مبارکہ میں بازار جانے کی جو دعا منقول ہے، اسے ہمارے ہاں معروف چھ کلموں میں سے چوتھا کلمہ کہتے ہیں، چونکہ حدیث میں اس کی صراحت موجود ہے، لہذا چوتھے کلمے کو بازار جانے کی دعا کہنے میں کوئی حرج نہیں ہے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

سنن الترمذي: (رقم الحديث: 3428، ط: شركة مكتبة)

حدثنا احمد بن منيع قال: حدثنا يزيد بن هارون قال: أخبرنا أزهر بن سنان قال: حدثنا محمد بن واسع قال: قدمت مكة فلقيني أخي سالم بن عبد الله بن عمر فحدثني عن أبيه عن جده أن رسول الله صلى الله عليه وسلم قال: من دخل السوق فقال: "لا اله إلا الله وحده لا شريك له، له الملك وله الحمد يحيي ويميت وهو حي لا يموت، بيده الخير وهو على كل شيء قدير كتب الله له ألف ألف حسنة ومحا عنه ألف ألف سيئة ورفع له ألف ألف درجة". هذا حديث غريب وقد رواه عمرو بن دينار وهو قهرمان آل الزبير عن سالم بن عبد الله، هذا الحديث نحوه.

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص،کراچی

Print Full Screen Views: 397
chotay / 4 / fourth kalma / kalmay ko bazar jane ki dua kehna

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Azkaar & Supplications

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © Al-Ikhalsonline 2023.