عنوان: لیپ ٹاپ پر کام کرتے ہوئے یا گاڑی چلاتے ہوئے ذکر و اذکار کرنا(9980-No)

سوال: کیا ملازمت میں لیپ ٹاپ پہ کام کرتے ہوئے استغفار کا ذکر کرنا یا گاڑی چلاتے ہوئے ذکر کرنا جائز ہے یا نہیں؟ کن کن کاموں کو کرتے وقت استغفار کا ذکر کیا جا سکتا ہے؟

جواب: یاد رہے کہ ذکر و اذکار اور استغفار کے لئے کوئی خاص وقت یا حالت متعین نہیں ہے، مسلمان اپنی سہولت کے مطابق کسی بھی وقت ذکر کرسکتا ہے، البتہ برہنہ حالت اور بیت الخلاء میں ذکر کرنا مکروہ ہے۔
اسی طرح ملازمت کے اوقات میں فرض، واجب اور سنت مؤکدہ نماز کے علاوہ کوئی نفلی کام مثلاً: قرآن مجید کی تلاوت، ذکر و اذکار یا نفل نماز پڑھنے کی اجازت نہیں ہے، تاہم اگر مطلوبہ کام مکمل ہوچکا ہو اور کام نہ ہونے کی وجہ سے وقت فارغ ہو یا ادارے کی طرف سے کوئی ممانعت نہ ہو اور ذکر کرنے سے کام کے معیار پر بھی کوئی فرق نہ پڑتا ہو تو اس صورت میں نفلی اعمال کرنے کی گنجائش ہے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

القرآن الکریم:(آل عمران، الایة: 191)
الَّذِیْنَ یَذْكُرُوْنَ اللّٰهَ قِیٰمًا وَّ قُعُوْدًا وَّ عَلٰى جُنُوْبِهِمْ وَیَتَفَكَّرُوْنَ فِیْ خَلْقِ السَّمٰوٰتِ وَالْاَرْضِۚ-رَبَّنَا مَا خَلَقْتَ هٰذَا بَاطِلًاۚ-سُبْحٰنَكَ فَقِنَا عَذَابَ النَّارِo

الدر المختار مع رد المحتار: (293/1، ط: سعید)
ولابأس لحائض وجنب بقرأة أدعیة ومسها وحملها وذکر الله تعالی وتسبیح الخ۔
(قوله: ولا بأس) يشير إلى أن وضوء الجنب لهذه الأشياء مستحب كوضوء المحدث۔

الدر المختار: (156/1، ط: سعید)
'' ويستحب أن لا يتكلم بكلام مطلقاً، أما كلام الناس؛ فلكراهته حال الكشف، وأما الدعاء؛ فلأنه في مصب المستعمل ومحل الأقذار والأوحال''

رد المحتار :(70/6، ط: سعید)
(قوله: وليس للخاص أن يعمل لغيره) بل ولا أن يصلي النافلة. قال في التتارخانية: وفي فتاوى الفضلي وإذا استأجر رجلاً يوماً يعمل كذا، فعليه أن يعمل ذلك العمل إلى تمام المدة ولايشتغل بشيء آخر سوى المكتوبة، وفي فتاوى سمرقند: وقد قال بعض مشايخنا: له أن يؤدي السنة أيضاً. واتفقوا أنه لايؤدي نفلاً، وعليه الفتوی۔

والله تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص،کراچی

Print Full Screen Views: 441
lap top per kaam karte huwe ya gari / car chalate / chaltey huwe zikar wa azkar karna

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Azkaar & Supplications

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © Al-Ikhalsonline 2023.