عنوان: مزاحیہ ویڈیوز دیکھنا(10173-No)

سوال: کیا نیٹ پیکج لگا کر اس سے مزاحیہ چیزیں دیکھنا جائز ہے؟

جواب: سوشل میڈیا کی مختلف مزاحیہ ویڈیوز چونکہ زیادہ تر غیر شرعی امور جیسے: نامحرم کی تصاویر٬ میوزک٬ فحاشی اور غیر شرعی طنز و مزاح وغیرہ پر مشتمل ہوتی ہیں٬ اس لیے ایسی چیزوں پر مشتمل ویڈیوز دیکھنے سے اجتناب کرنا ضروری ہے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

القرآن الکریم: (لقمان، الایة: 6)
وَ مِنَ النَّاسِ مَنۡ یَّشۡتَرِیۡ لَہۡوَ الۡحَدِیۡثِ لِیُضِلَّ عَنۡ سَبِیۡلِ اللّٰہِ بِغَیۡرِ عِلۡمٍ ٭ۖ وَّ یَتَّخِذَہَا ہُزُوًا ؕ اُولٰٓئِکَ لَہُمۡ عَذَابٌ مُّہِیۡنٌ o

سنن الترمذی: (رقم الحدیث: 1637)
عن عبد اﷲ بن عبد الرحمن بن أبي حسین أن رسول ﷲ صلی ﷲ علیه وسلم -إلی- کل ما یلہوبه الرجل المسلم باطل، إلا رمیه بقوسه، وتادیبه فرسه، وملاعبته أہله، فإنہن من الحق.

واللّٰه تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص،کراچی

Print Full Screen Views: 859 Jan 19, 2023
mazahia / comedian videos dekhna

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Prohibited & Lawful Things

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © Al-Ikhalsonline 2024.