عنوان: ذاتی اور انفرادی ایزی پیسہ اکاؤنٹ کے ذریعے رقم بھیجنے یا منگوانے پر چارجز لینے کا حکم(10300-No)

سوال: اپنے ذاتی اور انفرادی ایزی پیسہ اکاؤنٹ کے ذریعے کسی کو رقم بھیجنے یا منگوانے پر چارج وصول کرنا جائزہے یا نہیں؟

جواب: اپنے ذاتی اور انفرادی اکاؤنٹ سے کسی کو رقم بھیجنے یا منگواکر کر دینے کے عوض باہمی رضامندی سے طے شدہ اجرت (charges) لی جاسکتی ہے، بشرطیکہ ایزی پیسہ کمپنی کی طرف سے اس کی ممانعت نہ ہو، اگر کمپنی کی طرف سے ممانعت ہو تو پھر ایسی صورت میں کمپنی کے ساتھ کیے گئے معاہدے کی خلاف ورزی کا گناہ ہوگا۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

الفتاوى الهندية: (411/4، ط: دار الفكر)
وأما شرائط الصحة فمنها رضا المتعاقدين.

فقه البیوع: (89/1، ط: مکتبة معارف القرآن)
فالذي يتلخص من القرآن و السنة أن الوعد اذا كان جازما يجب الوفاء به دیانۃ، ویأثم الانسان بالاخلاف فیہ، الا اذا كان لعذر مقبول.

واللہ تعالیٰ أعلم بالصواب
دار الافتاء الاخلاص،کراچی

Print Full Screen Views: 660 Feb 27, 2023
zati or infradi / infiradi easy pesa account k zarye raqam bhejne ya mangwane per charges lene ka hokum / hokom

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Employee & Employment

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © Al-Ikhalsonline 2024.