عنوان: ایک دن میں کئی عمرے کرنا(11150-No)

سوال: مفتی صاحب! رہنمائی فرمائیں کہ کیا ایک دن میں متعدد عمرے کیے جاسکتے ہیں؟

جواب: واضح رہے کہ ایک دن میں ایک عمرہ کے تمام ارکان کی ادائیگی اور فراغت کے بعد حسبِ سہولت کئی عمروں کی ادائیگی کرنا جائز ہے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

البحر العمیق: (الباب السابع فی الاحرام، 778/2، ط: مؤسسة الریان)

یجب ان یعلم ان الجمع بین احرامی الحج او احرامی العمرۃ بدعۃ بالاتفاق بین اصحابنا
وفی الجامع الصغیر للعتابی حرام؛ لانہ من اکبر الکبائر ھکذا روی عن النبی صلی اللہ علیہ وسلم۔۔۔۔۔۔فی المحیط ولا جمع بین احرامی العمرۃ مکروہ۔۔۔۔۔وقال رجل فرغ من عمرتہ الا التقصیر فاحرم باخری فعلیہ دم۔

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص،کراچی

Print Full Screen Views: 568 Oct 05, 2023
aik din me kai umrah karna

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Hajj (Pilgrimage) & Umrah

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © Al-Ikhalsonline 2024.