عنوان: احرام شعبان ميں باندھا اور عمره رمضان ميں ادا کیا تو اس سے رمضان کی فضیلت حاصل ہونے کا حکم (15821-No)

سوال: السلام علیکم، مفتی صاحب! یہ پوچھنا ہے کہ اگر کسی شخص نے شعبان کے آخری دن عمرے کا احرام باندھا اور اسی شام رمضان شریف شروع ہو گیا، اس نے عمرہ رمضان کا چاند نظر آنے کے بعد کیا، اب یہ عمرہ احرام باندھنے کی وجہ سے شعبان میں سمجھا جائے گا یا یا افعال عمرہ رمضان میں ادا کرنے کیوجہ سے رمضان کا عمرہ سمجھا جائے گا؟ جواب عنایت فرماکر عنداللہ ماجور ہوں۔

جواب: واضح رہے کہ احرام عمرہ کے لیے شرط ہے رکن نہیں، اس لیے اگر کسی شخص نے شعبان میں احرام باندھا، لیکن عمرہ کے ارکان رمضان المبارک کا چاند نظر آنے کے بعد ادا کیے تو یہی سمجھا جائے گا کہ عمرہ رمضان میں ادا ہوا ہے، اور اس سے ان شاءاللہ رمضان المبارک کے عمرے کی فضیلت بھی حاصل ہوجائے گی، لہذا احرام شعبان میں باندھنے کی وجہ سے رمضان المبارک کی فضیلت کم نہیں ہوگی۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

الفتاوی الهندية: (219/1)
(وأما شرائط صحة أدائه فثلاثة) الإحرام والمكان والزمان هكذا في السراج الوهاج.

و أيضا: (237/1)
وأما شرائطها (أي العمرة) فشرائط الحج إلا الوقت هكذا في البدائع.

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص،کراچی

Print Full Screen Views: 136 Apr 17, 2024
ihram ehram shaban mein bandha or umrah ramzan mein ada kia too is se ramzan ki fazilat hasil hone ka hukum

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Hajj (Pilgrimage) & Umrah

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © Al-Ikhalsonline 2024.