عنوان: نماز کا فدیہ ادا کرنے کے لیے ایک تہائی مال کی وصیت کرنا (15940-No)

سوال: میرے والد محترم کا حال ہی میں انتقال ہوا ہے، انہوں نے ایک عدد مکان وراثت میں چھوڑا ہے، وفات سے قبل انہوں نے وصیت کی تھی کہ مکان جس قیمت پربھی فروخت ہو، اس کا 1/3 میری قضا شدہ نمازوں کا بطور فدیہ اد اکرنا ہے اور باقی 2 حصے بطریق وراثت تقسیم کرنا ہے،
مکان کی موجودہ مالیت تقریباً سوا 2 کروڑ ہے۔ والد صاحب الحمدللہ! نماز روزہ کے پابند رہے ہیں، جیسا ہم نے اپنے بچپن سے دیکھا (میری عمر 68 سال ہے، والد صاحب ماشاءاللہ 93 برس کی صحتمند زندگی گزار کر دارفانی سے رخصت ہوئے ہیں)
پوچھنا یہ ہے کہ کیا اتنی بڑی رقم بطور فدیہ دینا مناسب ہے؟ مزید وضاحت یہ ہے کہ ہم پانچ بیٹے اوردو بیٹیاں ان کے وارث ہیں، والدہ دوسال قبل انتقال کرچکی ہیں۔

جواب: واضح رہے کہ شریعتِ مطہرہ کا اصول یہ ہے کہ اگر میت نے کوئی جائز وصیت کی ہو، تو اس کے ترکہ میں سے تجہیز و تکفین اور قرضوں کی ادائیگی کے بعد جو مال بچ جائے، اس کے ایک تہائی (1/3) میں میت کی جائز وصیت کے مطابق عمل کرنا ورثاء پر لازم ہے۔
پوچھی گئی صورت میں چونکہ آپ کے والد صاحب نے اپنے متروکہ مال میں ایک تہائی حصہ نماز کے فدیہ کے طور پر ادا کرنے کی وصیت کی ہے، اس لیے آپ لوگوں پر لازم ہے کہ ان کی وصیت کے مطابق عمل کرتے ہوئے ایک تہائی مال بطور فدیہ ادا کریں، چاہے وہ کتنی بڑی رقم ہی کیوں نہ ہو۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

صحیح البخاری: (رقم الحدیث: 2744، ط: دارطوق النجاۃ)
عن عامر بن سعد، عن أبيه رضي الله عنه، قال: مرضت، فعادني النبي صلى الله عليه وسلم، فقلت: يا رسول الله، ادع الله أن لا يردني على عقبي، قال: "لعل الله يرفعك وينفع بك ناسا"، قلت: أريد أن أوصي، وإنما لي ابنة، قلت: أوصي بالنصف؟ قال: "النصف كثير"، قلت: فالثلث؟ قال: "الثلث، والثلث كثير أو كبير"، قال: فأوصى الناس بالثلث، وجاز ذلك لهم.

الدر المختار: (72/2، ط: ایچ ایم سعید)
(ولو مات وعليه صلوات فائتة وأوصى بالكفارة يعطى لكل صلاة نصف صاع من بر) كالفطرة (وكذا حكم الوتر).

واللّٰه تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص، کراچی

Print Full Screen Views: 66 May 14, 2024
namaz ka fidya ada karne ke liye aik tihai 1/3 maal ki wasiyat karna

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Inheritance & Will Foster

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © Al-Ikhalsonline 2024.