عنوان: عورت کے اعتکاف کا حکم(101642-No)

سوال: عورتوں کے اعتکاف کی کیا حیثیت ہے قرآن و سنت میں؟ اِس کے بارے میں کیا احکامات ہوں؟ کیا عورتوں کا اپنے گھر میں اعتکاف کرنا درست نہیں؟ وضاحت فرما دیجیئے۔ کیوں کہ بعض خواتین کہتی ہیں کہ قرآن اور حدیث سے لیڈیز کا اعتکاف میں بیٹھنا ثابت نہی ہے، پلیز وضاحت کردیں۔

جواب: عورت کے لیے بھی اعتکاف کرنا سنت ہے اور ثواب کا باعث ہے، اور حدیث سے ثابت ہے۔

کذا فی الصحیح البخاری:
" حدثنا عبد الله بن يوسف، حدثنا الليث، عن عقيل، عن ابن شهاب، عن عروة بن الزبير، عن عائشة رضي الله عنها، - زوج النبي صلى الله عليه وسلم -: «أن النبي صلى الله عليه وسلم، كان يعتكف العشر الأواخر من رمضان حتى توفاه الله، ثم اعتكف أزواجه من بعده»".

ترجمہ: حضرت عائشہ رضی اللہ عنھا فرماتی ہیں کہ اللہ کے نبی صلی اللہ علیہ وسلم رمضان کے آخری دس دنو ں کا اعتکاف کرتے تھے، یہاں تک کہ اللہ نے آپ کو وفات دیدی، پھر آپ کے بعد آپ کی ازواج نے اعتکاف کیا۔
صحيح البخاري (47/3)

دلائل:

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔


کذا فی الصحیح البخاری:

حدثنا عبد الله بن يوسف، حدثنا الليث، عن عقيل، عن ابن شهاب، عن عروة بن الزبير، عن عائشة رضي الله عنها، - زوج النبي صلى الله عليه وسلم -: «أن النبي صلى الله عليه وسلم، كان يعتكف العشر الأواخر من رمضان حتى توفاه الله، ثم اعتكف أزواجه من بعده»".

ترجمہ: حضرت عائشہ رضی اللہ عنھا فرماتی ہیں کہ اللہ کے نبی صلی اللہ علیہ وسلم رمضان کے آخری دس دنو ں کا اعتکاف کرتے تھے، یہاں تک کہ اللہ نے آپ کو وفات دیدی، پھر آپ کے بعد آپ کی ازواج نے اعتکاف کیا۔

(ج: 3، ص: 47)

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص، کراچی

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص، کراچی
Print Full Screen Views: 234
orat ke etikaf / etekaf ka hokom / hokum

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Aitikaf

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © Al-Ikhalsonline 2022.