عنوان: صدقہ نافلہ اور واجبہ میں فرق(1736-No)

سوال: حضرت! واجب صدقہ اور نفلی صدقہ میں کیا فرق ہے؟

جواب: صدقہ مال کے اس حصے کو کہا جاتا ہے، جو اللہ تعالیٰ کی رضا کیلئے خرچ کیا جائے۔ لفظ صدقہ اپنے اصلی معنی کی اعتبار سے عام ہے، نفلی صدقہ کو بھی کہا جاتا ہے اورفرض صدقہ یعنی زکوٰۃ کو بھی کہا جاتا ہے، لیکن جب لفظ صدقہ مطلق بولا جائے اور نفلی صدقہ کا کوئی قرینہ موجود نہ ہو، تو اس سے زکوٰۃ ہی مراد لیں گے، جیسا کہ قرآن مجید میں لفظ صدقہ کو زکوٰۃ پر محمول کیا گیا ہے۔ (اِنَّمَا الصَّدَقَاتُ لِلْفُقَرَاءِ… سورۃ توبہ:۷۲۰) اور اسی طرح (خُذْ مِنْ اَمْوَالِھِمْ صَدَقَۃً تُطَھِّرُھُمْ…سورۃ توبہ:۱۰۳) اور جہاں قرینہ سے یہ بات واضح ہورہی ہو کہ یہاں صدقات نافلہ مراد ہیں تو اُس سے زکوٰۃ نافلہ مراد لیں گے اور اس سے فرض زکوٰۃ مراد نہیں لیا جائے گا۔
لہذا خلاصہ کلام یہ ہے کہ
واجب صدقہ سے مراد زکوة اورصدقہ فطر وغیرہ ہیں اور نفل صدقہ سے مراد عام صدقہ ہے یعنی اللہ کے نام پر کوئی چیز دینا اور دوسرا فرق یہ ہے کہ صدقہ واجبہ صرف مستحق زکوة ہی کو دیا جاسکتا ہے اور نفلی صدقہ ہر کسی کو دے سکتے ہیں۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

موسوعۃ الفقہ الاسلامی: (75/3، ط: بیت الافکار الدولیۃ)
وقد يعين المستحق دون قدر ما يستحقه كأهل الزكاة الذين لا يجوز صرفها إلا لهم، وهم ثمانية كما قال سبحانه: {إنما الصدقات للفقراء والمساكين والعاملين عليها والمؤلفة قلوبهم وفي الرقاب والغارمين وفي سبيل الله وابن السبيل فريضة من الله والله عليم حكيم (٦٠)} [التوبة:٦٠].

رد المحتار: (339/2، ط: دار الفکر)
باب المصرف (قوله: أي مصرف الزكاة والعشر)۔۔۔۔۔وهو مصرف أيضا لصدقة الفطر والكفارة والنذر وغير ذلك من الصدقات الواجبة كما في القهستاني

الفقہ الاسلامی و ادلتہ: (2056/3، ط: دار الفکر)
ب صاحب الحاجة الشديدة: تستحب الصدقة على من اشتدت حاجته لقول الله تعالى: {أو مسكينا ذا متربة} [البلد:١٦/ ٩٠].

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص،کراچی

Print Full Screen Views: 3179 Jul 05, 2019
sadqa e naafila or wajiba mai farq, Difference between obligatory / wajiba and non-obligatory / nafli charity

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Zakat-o-Sadqat

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © Al-Ikhalsonline 2024.