عنوان: حاملہ عورت پر سورج اور چاند گرہن کے اثرات(101797-No)

سوال: پاکستان میں آج چاند گرہن ہوگا،جو کہ پاکستانی وقت کے مطابق رات 11:57 کو شروع ہوگا اور صبح 02:18 پر عروج پر ہوگا، جبکہ صبح 05:18 بجے ختم ہو جائے گا، حاملہ عورتیں چھری وغیرہ اور کچن میں کام سے احتیاط رکھیں اور اللہ پاک کے ذکر و اذکار کریں۔ مفتی صاحب کیا یہ درست ہے کہ حاملہ عورتیں چاند گرہن میں چھری نہ لیں یا کچن میں کام نہ کریں، شریعت میں اس کا کیا حکم ہے؟

جواب: رسول اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی سیرت طیبہ سے سورج گرہن اور چاند گرہن کے اوقات میں نوافل، دعاؤں اور صدقات کے واقعات تو ملتے ہیں، مگر سوال میں مذکورہ امور( چھری کو ہاتھ نہ لگانا یا کچن میں نہیں جانا) کے بارے میں آپ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے کوئی ممانعت بیان نہیں فرمائی، نہ ہی سورج گرہن اور چاند گرہن کے وقت حاملہ خواتین کے لیے کوئی خصوصی احکام بیان فرمائے ہیں، بلکہ یہ عوام کی بنائی ہوئی باتیں ہیں۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

شرح معانی الآثار: (332/1، ط: عالم الکتب)

قال: قال رسول الله صلى الله عليه وسلم: «إن الشمس والقمر آيتان من آيات الله لا ينكسفان لموت أحد ولا لحياته فإذا رأيتموه فقوموا فصلوا» فأمروا في هذا الحديث بالقيام عند رؤيتهم ذلك للصلاة وأمروا في الأحاديث الأول بالدعاء والاستغفار بعد الصلاة حتى تنجلي الشمس فدل ذلك على أنهم لم يؤمروا بأن لا يقطعوا الصلاة حتى تنجلي الشمس , وثبت بذلك أن لهم أن يطيلوا الصلاة إن أحبوا , وإن شاءوا قصروها , ووصلوها بالدعاء حتى تنجلي الشمس

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص،کراچی

Print Full Screen Views: 740
hamila orat par sooraj or chand girhan kay asrat, Effects of solar and lunar eclipses on pregnant women

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Miscellaneous

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © Al-Ikhalsonline 2022.