عنوان: مناسک حج سے فارغ ہونے کے بعد احرام سے نکلنے کے لیے، حاجیوں کا ایک دوسرے کے حلق (سر مونڈنے) کا حکم(1945-No)

سوال: مفتی صاحب ! کیا حاجی ایک دوسرے کا حلق یا قصر کر سکتے ہیں؟

جواب: واضح رہے کہ حالت احرام میں مناسکِ حج سے فارغ ہونے سے پہلے، اگر حاجی ایک دوسرے کے سر کے بال مونڈیں، تو سر مونڈنے والے پر صدقہ اور سر منڈوانے والے پر دم لازم آئے گا، لیکن اگر مناسک حج ادا کرنے کے بعد صرف احرام کی پابندیوں سے نکلنے کی نیت سے، ایک دوسرے کا حلق کریں، تو اس سے کچھ لازم نہیں آتا ہے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

غنیۃ الناسک: (258/1)
"وان حلق محرم رأس محرم قبل أوان التحلل بأمرہ أو بغیر امرہ فعلیہ صدقۃ، وعلی المحلوق دم۔ ولایتخیر فیہ، وان کان مکرھا، اونائما لانہ عذر من جھۃ العباد … وکذا اذا حلق رأس محرم فعلی الحالق الحلال صدقۃ، کما لو حلق نبات الحرم".

و فیھا ایضا: (ص: 174)
"ولو حلق رأسہ أو راس غیرہ من حلال أو محرم جازلہ الحلق لم یلزمھما شیٔ".

مناسک لملا علی القاری: (ص: 230)
"(واذا حلق) ای المحرم (رأسہ) ای رأس نفسہ (أو رأس غیرہ) ای ولو کان محرما (عند جواز التحلل) ای الخروج من الاحرام بأداء أفعال النسک (لم یلزمہ شیٔ) الاولی لم یلزمھما شیٔ وھذا حکم یعم کل محرم فی کل وقت".

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص،کراچی

Print Full Screen Views: 2733 Aug 09, 2019
manasik e hajj say faarigh honay kay baad ihram say nikalnay kay liye haajion ka aik doosray ka halaq ka hukum, Ruling on the pilgrims shaving each other's heads to get out of ihram after completing the rites / manasik of Hajj

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Hajj (Pilgrimage) & Umrah

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © Al-Ikhalsonline 2024.