عنوان: قادیانی گھرانے میں پیدا ہونے والا بچہ مرتد کے حکم میں ہوگا یا نہیں؟(101978-No)

سوال: السلام علیکم، جو بچہ پیدا ہی قادیانی گھرانے میں ہوا ہو، اور پیدائشی قادیانی ہو، تو اسپر مرتد کا حکم لگے گا یا پھر کافر کا ؟

جواب: واضح رہے کہ قادیانی گھرانے میں پیدا ہونے والا بچہ اپنے کفریہ عقائد کی وجہ سے زندیق کے حکم میں ہے۔

واضح ہو کہ "زندیق"  اس شخص کو کہتے ہیں، جو زبان سے تو مسلمان ہونے کا اقرار کرتا ہو، لیکن احکامِ اسلام کی باطل تاویل کرتا ہو، جیسے قادیانی ختمِ نبوت کی باطل تاویل کرتے ہیں۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

کما فی مؤطا امام مالک:

عن أبي هريرة؛ أن رسول الله صلى الله عليه وسلم قال: «كل مولود يولد على الفطرة. فأبواه يهودانه أو ينصرانه.

(ج: 2، ص: 338، ط: مؤسسۃ زاید بن سلطان)

وفی بغیۃ المرتاد لابن تیمیۃ:

فأما الزنديق الذي تكلم الفقهاء في قبول توبته في الظاهر فالمراد به عندهم المنافق الذي يظهر الإسلام ويبطن الكفر وإن كان مع ذلك يصلي ويصوم ويحج ويقرأ القرآن وسواء كان في باطنه يهوديا أو نصرانيا أو مشركا أو وثنيا وسواء كان معطلا للصانع وللنبوة أو للنبوة فقط أو لنبوة نبينا صلى الله عليه وسلم فقط فهذا زنديق وهو منافق

(ج: 1، ص: 338، ط: مکتبۃ العلوم والحکم)

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص، کراچی
Print Full Screen Views: 254

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Beliefs

Copyright © AlIkhalsonline 2021. All right reserved.

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com