عنوان:    (102062-No)

سوال: کیا ایسی نوجوان خواتین جو حجاب کرتی ہیں اور جن کے بال کالے ہیں ، وہ اپنے بالوں کا رنگ تبدیل کر سکتی ہے جو صرف ایک دن میں صرف اپنے شوہر کے لئے استعمال ہونے والی فیشن کے بالوں کے رنگوں میں بدل سکتی ہے؟ اسلام میں بالوں کی رنگت تبدیل کرنے کی اجازت ہے۔؟

جواب: بالوں کو کالے رنگ سے رنگنا مکروہِ تحریمی ہے،اور کالے رنگ کے علاوہ دوسرے رنگ سے رنگنا جائز ہے، بشرطیکہ اس ميں كفار يا فاسق لوگوں سے مشابہت نہ ہو۔

لمافی الحدیث:
ﻋﻦ اﺑﻦ ﻋﺒﺎﺱ، ﻗﺎﻝ: ﻣﺮ ﻋﻠﻰ اﻟﻨﺒﻲ ﺻﻠﻰ اﻟﻠﻪ ﻋﻠﻴﻪ ﻭﺳﻠﻢ ﺭﺟﻞ ﻗﺪ ﺧﻀﺐ ﺑﺎﻟﺤﻨﺎء، ﻓﻘﺎﻝ: «ﻣﺎ ﺃﺣﺴﻦ ﻫﺬا» ﻗﺎﻝ: ﻓﻤﺮ ﺁﺧﺮ ﻗﺪ ﺧﻀﺐ ﺑﺎﻟﺤﻨﺎء ﻭاﻟﻜﺘﻢ، ﻓﻘﺎﻝ: «ﻫﺬا ﺃﺣﺴﻦ ﻣﻦ ﻫﺬا»، ﻗﺎﻝ: ﻓﻤﺮ ﺁﺧﺮ ﻗﺪ ﺧﻀﺐ ﺑﺎﻟﺼﻔﺮﺓ، ﻓﻘﺎﻝ: «ﻫﺬا ﺃﺣﺴﻦ ﻣﻦ ﻫﺬا ﻛﻠﻪ۔ (سنن أبي داؤد / باب ما جاء في خضاب السواد، حدیث نمبر: 4211)
وفیہ ایضا:
عن ابن عباس رضي اللّٰہ عنہما قال: قال رسول اللّٰہ صلی اللّٰہ علیہ وسلم: یکون قوم یخضبون في آخر الزمان بالسواد کحواصل الحمام، لا یریحون رائحۃ الجنۃ۔(سنن أبي داؤد / باب ما جاء في خضاب السواد، حدیث نمبر: 4212)
وفیہ ایضا
ﻋﻦ اﺑﻦ ﻋﻤﺮ، ﻗﺎﻝ: ﻗﺎﻝ ﺭﺳﻮﻝ اﻟﻠﻪ ﺻﻠﻰ اﻟﻠﻪ ﻋﻠﻴﻪ ﻭﺳﻠﻢ: ﻣﻦ ﺗﺸﺒﻪ ﺑﻘﻮﻡ ﻓﻬﻮ ﻣﻨﻬﻢ۔(سنن أبي داؤد: حدیث نمبر: 4031)
وفی الشامیة:
ﻭﻣﺬﻫﺒﻨﺎ اﺳﺘﺤﺒﺎﺏ ﺧﻀﺎﺏ اﻟﺸﻴﺐ ﻟﻠﺮﺟﻞ ﻭاﻟﻤﺮﺃﺓ ﺑﺼﻔﺮﺓ ﺃﻭ ﺣﻤﺮﺓ ﻭﺗﺤﺮﻳﻢ ﺧﻀﺎﺏﻫ ﺑﺎﻟﺴﻮاﺩ ﻋﻠﻰ اﻷﺻﺢ ﻟﻘﻮﻟﻪ - ﻋﻠﻴﻪ اﻟﺼﻼﺓ ﻭاﻟﺴﻼﻡ - «ﻏﻴﺮﻭا ﻫﺬا اﻟﺸﻴﺐ ﻭاﺟﺘﻨﺒﻮا اﻟﺴﻮاﺩ»
(ج: 6،ص: 756، ط: دارالفکر، بیروت۔)

عورتوں کے مسائل( حجاب،زینت وغیرہ) میں مزید فتاوی

سوال:
15 Sep 2019
اتوار 15 ستمبر - 15 محرّم 1441

Copyright © AlIkhalsonline 2019. All right reserved.

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com