عنوان: کیا ایک شخص کی زندگی دوسرے کو لگ سکتی ہے؟(102558-No)

سوال: السلام علیکم، مفتی صاحب! کیا ایک شخص کی زندگی دوسرے شخص کو لگ سکتی ہے؟

جواب: واضح رہے کہ ایک شخص کی زندگی دوسرے شخص کو نہیں لگ سکتی۔

۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

کما قال اللہ تعالی:

وَ مَا کَانَ لِنَفْسٍ اَنْ تَمُوْتَ اِلَّا بِاِذْنِ اللّٰہِ کِتٰبًا مُّؤَجَّلًا ؕ۔

(ال عمرآن، ١۴۵)

وقال تعالی:

اِذَا جَآءَ اَجَلُہُمْ فَلَا یَسْتَاْخِرُوْنَ سَاعَۃً وَّ لَا یَسْتَقْدِمُوْنَ

﴿سورة یونس، ۴۹﴾

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص، کراچی
Print Full Screen Views: 169

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Beliefs

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © AlIkhalsonline 2021.