عنوان: کیا ایک احرام سے کئی عمرے ہوسکتے ہیں؟(103579-No)

سوال: السلام علیکم، مفتی صاحب! میرے والد صاحب کا اس سال عمرہ پر جانے کا ارادہ ہے، اور وہ چاہتے ہیں کہ میں اپنی ہر اولاد کی طرف سے ایک ایک عمرہ کروں، تو اگر وہ مکہ مکرمہ میں قیام کے دوران عمرے ادا کرنا چاہیں، تو کیا ہر عمرے کے لیے مسجد عائشہ یا مقام جعرانہ جاکر نیا احرام باندھنا ضروری ہے؟ یا ایک ہی احرام سے کئی عمرے ادا کیے جا سکتے ہیں؟

جواب: واضح رہے کہ ہر عمرے کیلئے الگ احرام باندھنا ضروری ہے، ایک احرام سے کئی عمرے ادا کرنا صحیح نہیں ہے، لہذا ایک دفعہ احرام باندھ کر طواف اور سعی کے بعد بال منڈوا کر احرام کھول دیا جائے، پھر اس کے بعد مسجد عائشہ یا مقام جعرانہ جاکر دوبارہ عمرے کا نیا احرام باندھا جائے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

کذا فی البحر العمیق:

یجب ان یعلم ان الجمع بین احرامی الحج او احرامی العمرۃ بدعۃ بالاتفاق بین اصحابنا
وفی الجامع الصغیر للعتابی حرام؛ لانہ من اکبر الکبائر ھکذا روی عن النبی صلی اللہ علیہ وسلم۔۔۔۔۔۔فی المحیط ولا جمع بین احرامی العمرۃ مکروہ۔۔۔۔۔وقال رجل فرغ من عمرتہ الا التقصیر فاحرم باخری فعلیہ دم۔

(الباب السابع فی الاحرام،ج:2،ص:778، 784)

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص، کراچی

Print Full Screen Views: 351
Aik, Ek, 1, Ehraam, Ahraam, Ihraam, Kai, Umray, Umrah, Adaa, Ada, ho, saktay, hain, Can multiple Umrah be performed with same Ihram , Performing multiple umrah with one Ihram, Performing mroe than one Umrah with the same Ihram, Ihraam, Ahraam, Ehraam

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Umrah

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © Al-Ikhalsonline 2022.