عنوان: مزدلفہ میں وتر اور سنتیں پڑھنے کا حکم(3766-No)

سوال: السلام علیکم، مفتی صاحب! کیا مزدلفہ میں حجاج کرام کو مغرب اور عشاء کی نماز پڑھنے کے بعد سنتیں اور وتر پڑھنا ضروری ہیں یا نہیں؟

جواب: واضح رہے کہ وتر کی نماز واجب ہے، اس کا پڑھنا مقیم اور مسافر ہر ایک کے ذمہ لازم ہے، البتہ سنتوں کے متعلق حکم یہ ہے کہ سنن مؤکدہ کا ادا کرنا مقیم کے لئے ضروری ہے، مسافر کیلئے اختیار ہے، چاہے تو پڑھ لے، چاہے نہ پڑھے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

رد المحتار: (774/1)
وقد ذکرنا مراراً انھا بمنزلۃ الواجب ولھذا کان الاصح انہ یاثم بترک السنۃ الموکدۃ کالاواجب۔

الفتاوی الھندیۃ: (کتاب الصلاۃ، 139/1)
ولا قصر فی السنن۔۔۔۔۔۔۔وبعضھم جوزوا للمسافر ترک السنن والمختار انہ لا یاتی بھا فی حال الخوف ویاتی بھا فی حال القرار و الامن۔

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص،کراچی

Print Full Screen Views: 834 Mar 17, 2020
Muzdalfa, Muzdalfah, Mein, Main, Witr, Aur, Sunnatein, Parhnay, Padhnay, ka, Hukm, Hukum, Ruling of Witr and sunnah prayers at Muzdalfah, Witar, Witar Prayers, Sunnah prayers, in Muzdalfah, muzdalfa

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Hajj (Pilgrimage) & Umrah

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © Al-Ikhalsonline 2024.