عنوان: مسجد الحرام کے باہر پڑی چپلوں کا شرعی حکم(3787-No)

سوال: السلام علیکم، مفتی صاحب! مسجد الحرام کے باہر عام طور پر چپلیں اور جوتے پڑے ہوتے ہیں، اور ان کے بارے میں معلوم نہیں ہوتا کہ ان کا مالک کون ہے، کیا اس طرح اپنی ذاتی چپل گم ہو جانے کی صورت میں وہاں پڑی کسی چپل کو پہن کر ہوٹل آجانا جائز ہے؟

جواب: صورت مسؤلہ میں جن چپلوں کے بارے میں یہ خیال ہو کہ ان کا مالک ان چپلوں کو تلاش کرے گا، تو اس کا پہننا صحیح نہیں ہے، اور جو چپلیں اس خیال سے چھوڑ دی گئی ہوں کہ ان کو کوئی بھی پہن لے، تو ان کو پہن کر ہوٹل آجانا صحیح ہے، کیونکہ ویسے بھی ان کو اٹھا کر ضائع ہی کر دیا جاتا ہے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

رد المحتار: (کتاب اللقطۃ، 279/4)
ولو فی الحرم۔۔۔۔۔۔۔۔۔فینتفع الرافع بھا
ای الی ان غلب علی ظنہ ان صاحبھا لا یطلبھا۔

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص،کراچی

Print Full Screen Views: 845 Mar 18, 2020
Masjid ul Haram, Masjid-ul-Haram, kay, ke, bahar, bahir, pari, chappalon, ka, shari, sharai, hukm, hukum, Ruling on slippers placed outside Masjid ul Haram, Masjid-ul-Haram, Makkah, Masjid al-haram

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Hajj (Pilgrimage) & Umrah

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © Al-Ikhalsonline 2024.