عنوان: طواف زیارت میں رمل اور اضطباع کرنے کا حکم(3814-No)

سوال: السلام علیکم، مفتی صاحب! کیا طواف زیارت کرتے وقت رمل اور اضطباع کیا جائے گا یا نہیں؟

جواب: واضح رہے کہ اگر سعی طواف زیارت کے بعد کرنی ہو، تو اس صورت میں رمل کیا جائے گا، اور چونکہ طواف زیارت عموما سادہ کپڑے پہن کر کیا جاتا ہے، اس لیے اس میں اضطباع نہیں ہو سکتا، البتہ اگر احرام کی چادریں پہنی ہوں، تو اضطباع بھی کر لیا جائے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

الجوھرۃ النیرۃ: (کتاب الحج، 191/1، ط: دار الکتاب دیوبند)
فإن کان سعی بین الصفا والمروۃ عقیب طواف القدوم لم یرمل في ہذا الطواف ولا سعی علیہ، وإن لم یکن قدم السعی رمل في ہذا الطواف وسعی بعدہ علی ما قدمنا (القدوري) وفي الجوہرۃ: لأن السعی لم یشرع إلا مرۃ واحدۃ وکذا الرمل ماشرع إلا مرۃ في طواف بعدہ سعی۔الخ

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص،کراچی

Print Full Screen Views: 1720 Mar 18, 2020
Tawaf e ziarat, Tawaf-e-ziarat, mein, main, ramal, raml, aur, iztiba, iztiba'a, karnay, karne, ka, hukm, hukum, Ruling of doing Ramal and Iztiba during Tawaf e Ziarat, Iztiba'a, raml, Tawaf-e-Ziarat

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Hajj (Pilgrimage) & Umrah

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © Al-Ikhalsonline 2024.