عنوان: کیا رشتے داروں کو ہدیہ نفلی صدقہ کی نیت سے دے سکتے ہیں؟(4133-No)

سوال: حضرت یہ فرمائیے کہ انسان اپنے غیر مستحق رشتہ داروں کو جو ہدایا وغیرہ دیتا ہے. اس میں نفلی صدقے کی نیت کر سکتا ہے؟ جزاک اللہ خیرا

جواب: واضح رہے کہ غیر مستحق رشتے داروں کو جو ہدایا وغیرہ دیتے ہیں، اس میں نفلی صدقہ کی نیت کرسکتے ہیں، البتہ بہتر یہ ہے کہ نفلی صدقہ کسی ضرورت مند کو دیا جائے۔
صدقہ اور ہدیہ میں فرق یہ ہے کہ صدقہ میں محض ثواب اور ہدیہ میں ثواب اور تطییب القلب دونوں مقصود ہوتے ہیں۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

بدائع الصنائع: (48/2، ط: سعید)

وأما صدقة التطوع فیجوز صرفها إلی الغنی لأنها تجري مجری الهبة".

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص،کراچی

Print Full Screen Views: 1283 Apr 25, 2020
kia rishtay daron ko hadiya nafli sadqa ki niyyat sai / say desakty hain?, Can I give gifts to relatives with the intention of nafli charity?

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Zakat-o-Sadqat

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © Al-Ikhalsonline 2024.