عنوان: قادیانی کو مسلمان سمجھنے کا شرعی حکم؟ (105137-No)

سوال: اگر کوئی مسلمان قادیانیوں کی جھوٹی سچی باتوں میں آکر اور ان کے رہن سہن اور تعلقات کو دیکھ کر ان کو اپنے سے بہتر مسلمان سمجھتا ہو، تو اس کے بارے میں شریعت کا کیا حکم ہے؟ جبکہ وہ ان کے عقائد ونظریات کے بارے میں بھی جانتا ہو۔

جواب: واضح رہے کہ قادیانیوں کے متعلق تمام علمائے امت کا فیصلہ ہے کہ یہ مرتد ہیں، اور پاکستان کے قانون کے مطابق بھی یہ لوگ مسلمان نہیں ہیں، لہذا اس کے بعد بھی اگر کوئی شخص ان کے عقائد سے واقف ہونے کے باوجود ان کو مسلمان سمجھتا ہے، تو وہ شخص دائرہ اسلام سے خارج ہوجائے گا، کیونکہ وہ کفر کو اسلام سمجھتا ہے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

وفی المرقاۃ:

لانہ اذا رای منکرا معلوما من الدین بالضرورۃ فلم ینکرہ ولم یکرھہ ورضی بہ استحسنہ کان کافرا۔

(مرقاۃ ج:5 ص:3)

کما فی علاء السنن:

من ادعی النبوۃ اوصدق من ادعاھا فقد ارتد لان مسیلمہ لما ادعی النبوۃ فصدقہ قومہ صاروا بذلک مرتدین۔

(احکام المرتدین: ج:12 ص:598۔ ط:ادارۃ القران کراچی)

وفی الفتاویٰ قاضی خان:

والرضا بالکفر کفر۔

(ج:3 ص:573)

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص، کراچی
Print Full Screen Views: 240
qaadyani ko musalmaan samajhnay ka shar'ee hukum?

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Beliefs

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © AlIkhalsonline 2021.