عنوان: سزا سے بچنے کے لیے اپنے آپ کو غیر مسلم کہنے والا کافر ہے (105184-No)

سوال: کیا فرماتے ہیں علمائے کرام اس مسئلہ کے بارے میں کہ رمضان کے مہینے میں دیکھنے میں آیا ہے کہ دن میں بھی کئی ہوٹل کھلے ہوئے ہوتے ہیں، اور اس میں بہت سے مسلمان جو روزہ نہیں رکھتے، وہاں چھپ کر کھانا کھاتے ہیں، اگر کبھی وہاں کسی پولیس کا چھاپہ پڑ جائے، اور پولیس ان مسلمان روزہ خوروں کو پکڑ لے، تو وہ جان چھڑانے کے لیے اور سزا سے بچنے کے لیے پولیس کے سامنے یہ اقرار کر لیتے ہیں کہ ہم مسلمان نہیں ہیں، بلکہ غیر مسلم ہیں، کیا یہ کہنے سے وہ مسلمان رہیں گے یا نہیں؟

جواب: واضح رہے کہ اگر کوئی شخص مسلمان ہونے کے باوجود یہ کہے کہ "میں مسلمان نہیں ہوں"، تو وہ شخص دائرہ اسلام سے خارج ہوجاتا ہے، ایسے شخص کو اپنے ایمان اور نکاح کی تجدید کرنی چاہیے، اور اپنی اس بیہودہ حرکت پر توبہ کرنی چاہیے، محض روزہ چھوڑنے کی غرض سے اپنے کو غیر مسلم ظاہر کرنا، بڑے خسارے کی بات ہے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

کذا فی جامع الفصولین:

ولو قیل لہ:الست بمسلم؟ فقال لا، یکفر۔ اذ معناہ عند الناس ان افعالہ لیست افعال المسلمین۔

(جامع الفصولین ج:1 ص:310)

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص، کراچی
Print Full Screen Views: 191
sazaa say bachnay kay liye apne aap ko gair muslim kehne wala kaafir hai

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Beliefs

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © AlIkhalsonline 2021.