عنوان: نجومی کے پاس جانے کی وجہ سے چالیس دن تک نماز قبول نہ ہونا (105199-No)

سوال: السلام علیکم، مفتی صاحب! کیا یہ بات شریعت کی رو سے صحیح ہے کہ جو شخص کسی نجومی کے پاس اپنے مستقبل کا حال جاننے کے لیے جائے، اور اس کو ہاتھ دکھائے، تو اس کی چالیس دن کی نماز اللہ تعالی قبول نہیں فرماتے، کیا یہ بات درست ہے؟

جواب: جی ہاں! حدیث شریف میں آپ صلی اللہ علیہ وسلم کا ارشاد مذکور ہے کہ: جو شخص کسی عرّاف(نجومی) کے پاس گیا، پس اس سے کوئی بات دریافت کی، تو چالیس دن تک اس کی نماز قبول نہیں ہوگی۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

کما فی الحدیث النبوی:

عن حفصۃ قالت قال رسول اﷲﷺ :من اتی عرافا فسألہ عن شیٔ لم یقبل لہ صلاۃ اربعین لیلۃ۔

(مشکوٰۃ شریف ص: 393)

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص، کراچی
Print Full Screen Views: 391
najoomi kay paas janay ki waja say chalees din tak namaz qubool na hona

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Beliefs

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © AlIkhalsonline 2021.