عنوان: قرب قیامت حضرت عیسیٰ علیہ السلام نبی بن کر آئیں گے یا امتی؟ (105374-No)

سوال: کیا فرماتے ہیں علمائے کرام اس مسئلے کے بارے میں کہ قیامت کے قریب دجال سے مقابلہ کرنے کے لئے جب حضرت عیسی علیہ السلام دنیا میں تشریف لائیں گے، تو کس حیثیت سے تشریف لائیں گے؟کیا وہ نبی کی حیثیت سے آئیں گے یا حضور صلی اللہ علیہ وسلم کے امتی ہونے کی حیثیت سے آئیں گے؟

جواب: واضح رہے کہ اللہ تعالیٰ نے رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم پر رسولوں اور نبیوں کے سلسلے کو ختم فرما دیا ہے، آپ صلی اللہ علیہ وسلم کے بعد اب قیامت تک کوئی نبی نہیں آئے گا، قرب قیامت حضرت عیسی علیہ السلام اس دنیا میں بحیثیت نبی جدید کے تشریف نہیں لائیں گے، بلکہ آپ صلی اللہ علیہ وسلم کے امتی کی حیثیت سے تشریف لائیں گے، اور شریعت محمدیہ پر عمل کریں گے، اور اسی کے مطابق فیصلہ فرمائیں گے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

کما فی الحدیث النبوی:

عن ابی ہریرۃؓ قال قال رسول اللّٰہ صلی اللّٰہ علیہ وسلم الا ان ابن مریم لیس بینی وبینہ نبی ولارسول الا انہ خلیفتی فی امتی من بعدی‘‘

(مجمع الزوائد ج:8 ص:268 باب ذکر المسیح عیسی بن مریم)

وفی فتح الملہم:

والمعنی أنہ ینزل حاکماً بہذہ الشریعة؛ فان ہذہ الشریعة باقیة لاتنسخ بل یکون عیسی حاکماً من حکام ہذہ الأمة ولایکون نزولہ من حیث إنہ نبی مستقل کما قد بعث قبل في بنی اسرائیل۔

(فتح الملہم: ج:2ص:204، کتاب الإیمان، باب نزول عیسی ابن مریم، ط: فیصل دیوبند )

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص، کراچی
Print Full Screen Views: 399
qurb r qiyamat hazrat esa alai hissalam nabi ban kar aaingy ya ummati

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Beliefs

Copyright © AlIkhalsonline 2021. All right reserved.

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com