عنوان: ہفتہ اتوار کو پروگرام کرنے میں کفار کی مشابہت کا ہونا(100547-No)

سوال: ہفتہ اور اتوار کے دنوں میں بعض لوگ جلسہ اور جشن اور خوشیاں مناتے ہیں، مثلاً ختم بخاری یا افتتاحی جلسات ہوتے ہیں، کیا اس میں تشبہ مع یہود و نصاریٰ ہوگا یا نہیں ہوگا؟ شرعی لحاظ سے اس کی حیثیت کیا ہوگی؟ شریعت اس کے بارے میں کیا کہتی ہے؟

جواب: غیرمسلم قوم کے شعارِ مذہبی میں مشابہت اختیار کرنا کفر، جبکہ شعارِ قومی اختیار کرنا گناہ کبیرہ ہے، جو چیز غیرمسلم کے ساتھ خاص نہیں، ان میں مشابہت بھی نہیں ہے، ہفتہ اور اتوار کو پروگرام وغیرہ کا انعقاد، چونکہ اپنی ضرورت و آسانی کی خاطر ہوا کرتا ہے، اس لیے اس میں یہود و نصاریٰ کی مشابہت بھی نہیں ہے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

سنن ابی داؤد: (44/4، ط: المكتبة العصرية)
عن ابن عمر، قال: قال رسول الله صلى الله عليه وسلم: «من تشبه بقوم فهو منهم»

الموسوعۃ الفقھیۃ الکویتیۃ: (100/26، ط: دار السلاسل)
ذهب جمهور الفقهاء إلى أن التشبه بغير المسلمين في اللباس الذي يميزهم عن المسلمين كالزنار ونحوه، والذي هو شعار لهم يتميزون عن المسلمين، يحكم بكفر فاعله ظاهرا إن فعله في بلاد الإسلام، وكان فعله على سبيل الميل إلى الكفار، أي: في أحكام الدنيا، إلا إذا كان الفعل لضرورة الحر أو البرد أو الخديعة في الحرب أو الإكراه من العدو. فلو علم بعد ذلك أنه لبسه لا لاعتقاد حقيقة الكفر لم يحكم بكفره فيما بينه وبين الله تعالى، وذلك لما روى ابن عمر، قال: قال رسول الله صلى الله عليه وسلم من تشبه بقوم فهو منهم

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص،کراچی

Print Full Screen Views: 171
hafta itwar ko programm karny mein kuffar ki mushabihat, resemblesness with non muslims,kuffar in arranging cermonies on saturdaysunday

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Miscellaneous

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © Al-Ikhalsonline 2022.