عنوان: حیض و نفاس کی حالت میں مسجد نبوی میں داخل ہونے کا حکم(105976-No)

سوال: اگر کوئی شخص اپنی بیوی کے ساتھ عمرہ کے لئے جائے، اور اس دوران اس کی بیوی کو حیض شروع ہوجائے یا وہ نفاس کی حالت میں ہوجائے، تو کیا اس کی بیوی ان حالتوں میں مسجد نبوی میں جاسکتی ہے؟

جواب: مسجد نبوی میں حیض اور نفاس والی عورت کے لیے داخل ہونے کی شرعاً اجازت نہیں ہے، لہذا ایسی حالتوں میں عورت کو چاہیے کہ مسجد نبوی سے باہر قریب ہی کسی متصل جگہ پر بیٹھ کر تسبیح و استغفار کرے اور یہیں سے درود و سلام بھیجے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

کما فی الھندیۃ:

(ومنها) أنه يحرم عليهما وعلى الجنب الدخول في المسجد سواء كان للجلوس أو للعبور. هكذا في منية المصلي

(الفصل الرابع في أحكام الحيض والنفاس والاستحاضة، ج: 1، ص: 38، ط: دار الفکر)

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص، کراچی

Print Full Screen Views: 332
haiz wa nifas ki halat mai masjid e nabvi mai daakhil honay ka hukum

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Umrah

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © Al-Ikhalsonline 2022.